(ذرا سوچئے (الیکشن 2013


پاکستان میں الیکشنز کی آمد آمد ہے۔ کون جیتے کون ہارے گا، کون کس کے ساتھ اتحاد بنائے گا یہ تو حتمی طور پر 11 مئی کے بعد ہی پتہ چلے گا۔ آپ جس پارٹی کو بہتر سمجھتے ہیں اسی کو ووٹ دیجئے، یہ  آپکا جمہوری حق ہے اور اسکا احترام سب کو کرنا چاہئے۔ آپ بس ووٹ ضرور ڈالئے۔ اگلے روز ٹوئیٹر پہ کسی نے بہت خوب کہا تھا کہ پانچ سال ذلیل ہونے سے بہتر ہے پانچ منٹ نکال کر ووٹ ڈال لو تاکہ کل کو کسی اور کو بلیم نہ کرو۔

images PTI2 pakistan-people-party-flag images

مگر ایک عجب بات ہے ان الیکشنز میں۔ میں نے یہ چیز میڈیا پر چلنے  والی پولیٹکل ایڈورٹزمنٹس، اخباری بیان اور جلسوں کی تقریروں میں نوٹ کی ہے۔ پی پی پی، مسلم لیگ ق اور تحریکِ انصاف ہاتھ دھو بلکہ نہا دھو کر مسلم لیگ ن کے پیچھے پڑی ہیں۔ گویا صرف نواز شریف کے ووٹ ٹوٹنے کی صورت میں ہی ان پارٹیز کے ووٹ پکے ہونگے۔ کہیں اسکی وجہ میاں صاحب کے سابقہ ادوار کی کارکردگی یا الیکشن 2013 کے انتخابی منشور کو مکمل ڈلیور کرنے کی قابلیت تو نہیں؟تمام پارٹیز کی الیکشن کیمپین اور فوکل پوائنٹس کا جائزہ لیں تو یہ بات آشکار ہوتی ہے کہ میاں صاحب اپنے زورِ بازو جبکہ دیگر انکی خامیوں پہ بھروسہ کرک بیٹھے ہیں راہِ اقتدار میں۔ بلکہ بعض حلقے تو اُن کو اے اور بی ٹیم کا خطاب بھی دے رہے ہیں، واللہ اعلم۔

ق لیگ کی میاں صاحب سے دشمنی و مخالفت کی وجہ تو سمجھ آتی ہے جو بقول شاعر ‘منصبِ دوستی سے جو اترا تو وہ دلربا، بگڑا اسقدر کہ صفِ اعداء میں آگیا’ اور پیپلز پارٹی کے کیس میں اس بار کسی شہادت کی عدم دستیابی کے باعث میاں صاحب پہ تکیہ کرنا پڑا۔ جیسے امریکی اسامہ کی ویڈیو یا ہلاکت والا ڈرامہ کرکے الیکشنز جیتتے آئے ہیں، اگلے الیکشنز میں ممکن ہے اوبامہ کے بیانات اور کال ریکارڈنگز چلا کر انتخابی مہم جاندار بنائی جائے۔  اپنی نااہلی چھپانے اور کم ظرفی پہ حرف نہ آنےدینے کی خاطر کسی دوسرے پہ الزام تراشیاں پی پی پی اور زرداری صاحب کے فہم سے بعید از قیاس نہیں مگر الجھن مجھے تحریکِ انصاف کے اس پراپیگنڈے سے ہے۔

#PPPFail

عمران خان جو ملکی سیاست میں ایک خوشگوار اضافہ ہیں اور  نئے کھلاڑی کے طور پر ابھرے ہیں، بہت تیزی سے انکا گراف چڑھا ہے، یوتھ بھی انکے ساتھ ہے ایسی کوئی کرپشن اور بدعنوانی بھی انکے دامن کا داغ نہیں مگر پھر بھی وہ الزام کی سیاست پر کیوں اترے ہوئے ہیں۔ میری معمولی سیاسی بصیرت تو اسی بات کو خان صاحب کی سیاسی موت کا ذمہ وار ٹھہرا رہی ہے ابھی سے۔ بہرحال بات ابھی یہ ہے کہ  خان صاحب کو میاں صاحب کا سہارا لینے کی ضرورت کیوں ہے؟ جب سے خان صاحب نے لاھور کا کامیاب جلسہ کیا ہے میاں صاحبان اور پنجاب گورنمنٹ کے پیچھے ہیں، بلکہ اتنا پیچھے ہیں کہ اس میں دوسرے صوبوں کی ابتر حالت اور ملک کی معاشی صورتحال اور دیگر مسائل کی طرف سے بھی دھیان ہٹا ہوا ہے۔ شیراتنا سوار کیا ہوا ہے کہ اپنے جلسوں میں بھی شیر پہ مہر لگانے کی بات کرتے ہیں، ہاشمی صاحب وزیراعظم نوازشریف کے نعرے لگوا دیتے ہیں۔ خان صاحب کی دیکھا دیکھی انکے انقلابی بچے بھی ہر مسئلے کو ن لیگ کے کھاتے میں ڈال دیتے ہیں۔ یوں خان صاحب اپنے ہر جلسے اور بیان میں اپنے سے زیادہ میاں صاحب کی مارکیٹنگ کردیتے ہیں۔

ذاتی پسند ناپسند ذاتی معاملات میں تو چل سکتی ہے مگر ملکی معاملات میں اعلیٰ ظرفی اور حوصلہ و برداشت اور تحمل کی ضرورت ہوتی ہے۔ خان صاحب آج نفرتوں کا جو بیج بو رہے ہیں وہ کل کو پوری قوم کو کاٹنا ہوگا، ہم ابھی شیعہ سنی وہابی بریلوی کی لڑائی سے باہر نہیں نکل پارہے کجا شیر و بلے کی تفریق! اور پہلے بیان بازی سے گریز کرنا چاہیئے ورنہ اپنی کی ہوئی باتیں اپنے ہی سامنے آجاتی ہیں اور خفت اٹھانی پڑتی ہے جیسے خان صاحب کو آج تک الطاف حسین کے معاملے پر اٹھانی پڑتی ہے۔

 اللہ سے دعا ہے کہ اسے کامیابی نصیب کرے جو ملک و قوم کا دردمند ہو اور قابلیت بھی رکھتا ہو۔ خدارا ذاتیات کو بنیاد بنا کر نفرتوں کے بیج مت بوئیں، آپ جس بھی امیدوار کو بہترین سمجھتے ہیں اسی کو ووٹ دیں، اپنے بل پر الیکشن جیتیں، کسی کی کردار کشی کرکے اقتدار تو شاید حاصل کرلیں مگر عزت نہیں کما سکیں گے۔ الیکشنز کے بعد بھی انشاء اللہ ہمیں اسی ملک میں رہنا ہے اک دوسرے کے بیچ نفرتیں ہونگی تو کیسے آگے بڑھ سکیں گے؟

آپکی انہی الزام تراشیوں کی وجہ سے کتنے لوگ آپ سے متنفر ہوگئے، لیڈر ایکسکوزز نہیں دیتا، وے آؤٹ دیتا ہے۔ اور اگر آپ بھی بھیڑ چال والوں میں شامل ہوجائیں گے تو آپکو زرداری کی بی ٹیم کہنے والے حق بجانب ہونگے، ذرا سوچئے۔  شکریہ۔ پاکستان زندہ باد

Advertisements

About Abrar Qureshi

Hi, Abrar Qureshi here. I am an average human being, just that. Gotta say something? write back. Get in touch? here's my twitter ID, come & say hi :)
This entry was posted in بلاگ and tagged , , . Bookmark the permalink.

2 Responses to (ذرا سوچئے (الیکشن 2013

  1. پنگ بیک: قبض اور قائم علی شاہ | آوارہ گرد کی ڈائری

  2. پنگ بیک: قبض اور قائم علی شاہ - Mix Platter

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s